میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

سوموار، 3 جولائی، 2017

انسانی اعمال کی کتاب اور ریکارڈر !

اللہ نے محمدﷺ کو خبرِغیب دی جو لوگ اپنے نطق کو تھوپنے کے لئے اللہ کی آیت چھپاتے ہیں، انہیں ٹیکسٹ بُک کے بارے بتا یا جائے  :

أَشْرَقَتِ الْأَرْضُ بِنُورِ رَبِّهَا وَوُضِعَ الْكِتَابُ وَجِيءَ بِالنَّبِيِّينَ وَالشُّهَدَاءِ وَقُضِيَ بَيْنَهُم بِالْحَقِّ وَهُمْ لَا يُظْلَمُونَ [39:69]

اللہ نے محمدﷺ کو بتایا : جو کرے گا وہ بھرے گا !

وَلَا نُكَلِّفُ نَفْسًا إِلَّا وُسْعَهَا وَلَدَيْنَا كِتَابٌ يَنطِقُ بِالْحَقِّ وَهُمْ لَا يُظْلَمُونَ [23:62]

اللہ نے محمدﷺ کو کتاب کے بارے میں معلومات دی، جس سے اُن کی ریکارڈڈ ، منطق انہیں سنائی جائے گی:

هَذَا كِتَابُنَا يَنطِقُ عَلَيْكُم بِالْحَقِّ إِنَّا كُنَّا نَسْتَنسِخُ مَا كُنتُمْ تَعْمَلُونَ [45:29]

کیا اللہ کے پاس ہر انسان کی اچھائیوں اور برائیوں پر لکھی ہوئی کتابوں کا انبار ہے ؟

اللہ نے رسول اللہ کو بتایا :

فَمَن يَعْمَلْ مِثْقَالَ ذَرَّةٍ خَيْرًا يَرَهُ [99:7]
وَمَن يَعْمَلْ مِثْقَالَ ذَرَّةٍ شَرًّا يَرَهُ [99:8]

اللہ نے محمدﷺ کو بتایا ، جب ایک انسان اچھائی کرتا ہے ، تو اُسے دُگنے اجر (نمبر ) ملتے ہیں :
إِنَّ اللّهَ لاَ يَظْلِمُ مِثْقَالَ ذَرَّةٍ وَإِن تَكُ حَسَنَةً يُضَاعِفْهَا وَيُؤْتِ مِن لَّدُنْهُ أَجْرًا عَظِيمًا [4:40]

کامیابی اُس کا مقدر ہے :
وَالْوَزْنُ يَوْمَئِذٍ الْحَقُّ فَمَن ثَقُلَتْ مَوَازِينُهُ فَأُوْلَـئِكَ هُمُ الْمُفْلِحُونَ [7:8]

لیکن یہ سب نمبر بمع امتحانی پرچے کہاں جمع ہورہے ہیں ؟
جی ہاں اتنا بڑا انبار کہ جس کا تصور ، انسان نہیں کر سکتا !

اللہ نے محمدﷺ کو بتایا ، کہ یہ لوگ کتاب کی بوسیدگی یا پوشیدگی کا بالکل نہ سوچیں !

وَقَالُوا لِجُلُودِهِمْ لِمَ شَهِدتُّمْ عَلَيْنَا ۖ قَالُوا أَنطَقَنَا اللَّـهُ الَّذِي أَنطَقَ كُلَّ شَيْءٍ وَهُوَ خَلَقَكُمْ أَوَّلَ مَرَّةٍ وَإِلَيْهِ تُرْجَعُونَ ﴿41:21﴾

وَمَا كُنتُمْ تَسْتَتِرُونَ أَن يَشْهَدَ عَلَيْكُمْ سَمْعُكُمْ وَلَا أَبْصَارُكُمْ وَلَا جُلُودُكُمْ وَلَـٰكِن ظَنَنتُمْ أَنَّ اللَّـهَ لَا يَعْلَمُ كَثِيرًا مِّمَّا تَعْمَلُونَ ﴿41:22﴾

وَذَٰلِكُمْ ظَنُّكُمُ الَّذِي ظَنَنتُم بِرَبِّكُمْ أَرْدَاكُمْ فَأَصْبَحْتُم مِّنَ الْخَاسِرِينَ ﴿41:23﴾

اللہ نے محمدﷺ کو انسان کے ہر عمل پر ، انسانی جلد میں سنگل کلک اور ڈبل کلک سے ریکارڈ محفوظ کرنے والوں کے بارے خبر دی :
وَإِنَّ عَلَيْكُمْ لَحَافِظِينَ ﴿82:10 كِرَامًا كَاتِبِينَ ﴿82:11 يَعْلَمُونَ مَا تَفْعَلُونَ ﴿82:12
 

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔