میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

پیر، 26 مئی، 2014

وہی کارواں وہی قافلہ تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو - مولوی اسماعیل میرٹھی

 مولوی اسماعیل میرٹھی نے  تین نظمیں ایسی ترتیب دیں کہ بچوں کے لئے عربی اور فارسی کے الفاظ جو کہ اردو میں عام طور سے مستعمل ہیں انکے مترادفات انکے ساتھ  سامنے آجائیں جو کہ روزمرہ کی زبان میں عام ہیں۔ اس میں مولانا نے جگہ جگہ غالب کے قادر نامہ سے استفادہ کیا ہے۔
 ایک نظم حکیم مومن خان مومنؔ کی زمین میں ہے۔ مومن نے ’تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو‘ کی ترکیب کو رومانوی انداز میں لکھا تھا ۔


مولوی اسماعیل میرٹھی نے اسکو بچوں کو سبق پڑھانے اور انکو آموختہ کرانے کے تناظر میں اس ترکیب کو ایک بالکل نئی صورت میں پیش کیا ہے۔ دوسرے شعر میں مولانا نے نظم کی بحر بیان کردی ہے جو کہ بحر کامل کا وہ وزن ہے جس میں ہر مصرع میں چار ارکان پورے پورے ہوتے ہیں اس لئے اسکو بحر کامل مثمن کہا جاتا ہے۔ یہاں مولانا کا مقصد یہ ہے کہ بچے شروع ہی میں شعر کی شعریت اور وزن کا شعور حاصل کر لیں:
وہی کارواں وہی  قافلہ تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
وہی منزل اور وہی مرحلہ تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
متفاعلُن،  متفاعلن،  متفاعلُن، متفاعلُن
اسے وزن کہتے ہیں شعر کا  تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
وہی شُکر ہے جو سِپاس ہے، وہ مُلول ہے جو اُداس ہے
جسے شِکوہ کہتے ہو ہے گلہ  ،    تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
وہی نقص ہے وہی کھوٹ ہے وہی ضرب ہے وہی چوٹ ہے
وہی سود ہے وہی فائدہ،   تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
وہی ہے ندی وہی نہر ہے وہی موج ہے وہی لہر ہے
یہ حباب ہے وہی بُلبُلہ، تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو
وہی کِذب ہے وہی جھوٹ ہے وہی جُرعہ ہے وہی گھونٹ ہے
وہی جوش ہے وہی وَلوَلہ،  تمہیں یاد ہو کہ نہ یاد ہو

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔