میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

پیر، 23 جون، 2014

وحی غیر متلو-1 آیات النساء

تاریخ کے مطابق 40 سال تک ، محمد بن عبداللہ  کی طرح سے پہچانے جانے والے ، مکہ کے مکین کو غارِ حرا  جو اُن کے گھر سے تقریباً 4.77 کلو میٹر  (فضائی راستہ)  کی پتھریلی مسافت پر اور سطح زمیں سے 863 فٹ بلند ی پر بلند ہے
جہاں سے پیدل مسافت ، تقریباً سات سے دس کلو میٹر بنتی ہے ، پہاڑی راستے کی وجہ سے اور اگر انسان تین منٹ میں دو سو  میٹر، کی رفتار سے چلے تو 15 منٹ لگتے ہیں , اور دس کلو میٹر دو سے ڈھائی گھنٹے لگتے ہیں ۔
غارِ حرا میں پہلی وحی متلو  ناز ہوتے ہی  آپ ﷺ  کی نبوت کا آغاز ہو گیا ، نبوت سے صرف نبی کو آگاہی ہوتی ہے کوئی دوسرا انسان اِس نہیں سمجھ سکتا ، خواہ وہ زُہد و تقویٰ کے کمال پر ہی کیوں نہ ہو ۔ اور پہلی وحی:

بِسْمِ اللَّـهِ الرَّ‌حْمَـٰنِ الرَّ‌حِيمِ
اقْرَ‌أْ بِاسْمِ رَ‌بِّكَ الَّذِي خَلَقَ ﴿1﴾ خَلَقَ الْإِنسَانَ مِنْ عَلَقٍ ﴿2﴾ اقْرَ‌أْ وَرَ‌بُّكَ الْأَكْرَ‌مُ ﴿3﴾ الَّذِي عَلَّمَ بِالْقَلَمِ ﴿4﴾ عَلَّمَ الْإِنسَانَ مَا لَمْ يَعْلَمْ ﴿5﴾سورة العلق
اور اِس نزول وحی کا سفر برائے ، کل انسان کرہ الارض ۔

۔ ۔ ۔ ۔  الْيَوْمَ أَكْمَلْتُ لَكُمْ دِينَكُمْ وَأَتْمَمْتُ عَلَيْكُمْ نِعْمَتِي وَرَ‌ضِيتُ لَكُمُ الْإِسْلَامَ دِينًا ۚ ۔ ۔
پر مکمل ہو۔    جو 114 سورتوں میں 6،236 آیات اور تیس سیپاروں  پر مشتمل ہیں اور القرآن کا حصہ ہیں۔
وحی متلو  محمد رسول اللہ پر اللہ کی جانب سے الکتاب سے القرآن کی صورت میں  نازل ہوئی ۔ اور اِس کے ساتھ ہی آپ کے دروس یعنی وحی غیر متلو ،  کا آغاز ہو گیا ، وحی متلو کی صورت میں تلاوت اور وحی غیر متلو کی صورت میں ۔ وحی متلو کی وضاحت ۔

وَمَا أَرْ‌سَلْنَا مِن رَّ‌سُولٍ إِلَّا بِلِسَانِ قَوْمِهِ لِيُبَيِّنَ لَهُمْ ۖ فَيُضِلُّ اللَّـهُ مَن يَشَاءُ وَيَهْدِي مَن يَشَاءُ ۚ وَهُوَ الْعَزِيزُ الْحَكِيمُ ﴿4﴾ ابراهيم  
قارئین ، جو بھاری پتھروحی غیر متلو کا  میں اب اٹھا رہا ہوں ، یقین مانئیے کہ وحی متلو کو سمجھنے سے اور اُس کی آیات ، فیس بک یا اپنے بلاگ ، میں پیسٹ کرنے سے بھی بہت بھاری ہے ، کیوں کہ وہ ایک حقیقت ہے اور وحی غیر متلو ، ایک مجاز ، لیکن کیوں کہ ، جمیع امت مسلم اِسے اقوال و حدیث ِ رسول سمجھتی ہیں اور سب کا ایمان ہے کہ کہ یہ وحی متلو (القرآن)  کی تفسیر ہے جس کی حفاظت کا ذمہ لیتے ہوئے محدثین صحاح ستہ نے اِنہیں محفوظ کردیا ہے اور یہ احادیث ﷺ وحی متلو (القرآن) الْحَمْدُ لِلَّـهِ رَ‌بِّ الْعَالَمِينَ  سے لے کر  مِنَ الْجِنَّةِ وَالنَّاسِ  پر ناسخ بھی  ہیں اور اِ س وحی غیر  متلو نے ،  ہے6،236 آیات   میں سے کئی منسوخ کر دیں ہیں یا مصحف عثمانی کی 6،666 آیات  میں سے 430 آیات منسوخ ہو کر ، موجودہ تصحیح شدہ القرآن ، عالمین ، فہم و شعور دانش و تفکر نے ، اجماع و قیاس کے بعد ہم تک پہنچایا ہو اور اب یہ ایک ، جامع اور مکمل ۔ القرآن ہے ،  جبھی تو سارے حفاظ نے اِسی کو حفظ کیا ، خیر کہا جاتا ہے کہ اِس آیت میں:

إِنَّا نَحْنُ نَزَّلْنَا الذِّكْرَ‌ وَإِنَّا لَهُ لَحَافِظُونَ ﴿الحجر: ٩﴾
، الذِّكْرَ‌   کا مفہوم یا اشارہ  قرآن اور حدیث  کی طرف ہے ۔
اب  میں آتا ہوں  اُس محفوظ ، وحی غیر متلو کی طرف  ، جس کو میں  نے ہو بہو کٹ پیسٹ کیا ہے ،   یہ صفحہ جو آپ  نیچے  دیکھ رہے ہیں ، یہ
علامہ وحید الزماں کی  ترجمہ شدہ کتاب کا ہے 

  اور   یہ صفحہ جو آپ  نیچے  دیکھ رہے ہیں ، یہ  محمد داؤد راز  صاحب کی کتاب  ، پی ڈی ایف فارمیٹ میں میں اِس کو ، القرآن کو سمجھنے کے لئے استعمال کروں گا، اِ س کو کلک کے ذریعے آپ بڑا کر کے دیکھ سکتے ہیں  ۔میں نے اِس میں سے  صرف ، وحی غیر متلو کا انتخاب کیا ہے ، جو جناب بخاری صاحب کی ، منتخب شدہ ہیں اور بعد کے مصنفین کی تشریحات ، مقدمات یا رائے کو میں نے نہیں لیا ہے ۔ تاکہ ہم ، صرف اور صرف بخاری شریف سے  ، القرآن کو سمجھنے کی کوشش کریں وگرنہ کئی عالموں نے ہم مسلمانوں پر بہت زور دیا ، لیکن ہم فرقہ در فرقہ تقسیم ہوتے گئے ۔ شاید اِس سے ہم میں اتحاد ہو جائے ،  نیز میں یہاں پر القرآن کی پوری آیت بھی پیسٹ کروں گا ، جس کا وحی غیر متلو میں ذرا سا بھی اشارہ ملے ۔ امید ہے کہ آپ تحمل سے کام لیں گے ۔ ایک بات وہ یہ کہ ، آپ کو بھی منکرین حدیث کے بارے میں علم ہوگا کہ وہ ، اس کتاب میں موجود 7563  احادیث میں سے کن کے منکر ہو رہے ہیں ،  لہذا ثابت قدم رہئے ۔ 


یہ ، بخاری شریف کا پہلا صفحہ، پہلا باب، اور پہلی وحی غیر متلو (حدیث )
کتاب الوحی  کہ وحی کی ابتداء کیسے ہوئی ؟



إِنَّا أَوْحَيْنَا إِلَيْكَ كَمَا أَوْحَيْنَا إِلَىٰ نُوحٍ وَالنَّبِيِّينَ مِن بَعْدِهِ ۚ وَأَوْحَيْنَا إِلَىٰ إِبْرَ‌اهِيمَ وَإِسْمَاعِيلَ وَإِسْحَاقَ وَيَعْقُوبَ وَالْأَسْبَاطِ وَعِيسَىٰ وَأَيُّوبَ وَيُونُسَ وَهَارُ‌ونَ وَسُلَيْمَانَ ۚ وَآتَيْنَا دَاوُودَ زَبُورً‌ا ﴿163﴾ النساء
وحی غیر متلو (حدیث )  1 ۔  
اور  پہلی حدیث، کہ عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔  

مندرجہ ذیل مکررات ہیں۔ جو یہیں درج کر دیئے ہیں اب یہ دوبارہ اپنے نمبر پر نہیں آئیں گے تاکہ کنفوژن سے بچا جائے ۔
وحی غیر متلو (حدیث )  54 ۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔

وحی غیر متلو (حدیث )  2529 ۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔
وحی غیر متلو (حدیث )  3898۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔
 وحی غیر متلو (حدیث )  5070 ۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔
 وحی غیر متلو (حدیث )  6689 ۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔
 وحی غیر متلو (حدیث )  6953 ۔   عمل کا دارومدار نیت پر ہے۔


خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔