میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعہ، 9 جنوری، 2015

منکر اور فحش سے بچنے کے لئے محمدﷺ کے 100 احکامات

روح القدّس نے محمد ﷺ  کو الکتاب میں جتنے احکامات بتائے ۔     یہی اُسوہ  (رسول اللہ کا عمل)    اور سنت ( ایمان والوں کے لئے عمل)     ہیں۔
یہ بتائیے دوستو کہ اِن میں سے کس پر عمل کرنا مشکل ہے ؟  

1. سچ کو جھوٹ کا لبادہ مت پہناؤ    -     (الکتاب :سورۃ 2 آیت 42)  
2. اچھے اعمال کی ذاتی مثال پہلے قائم کرو     -     (الکتاب :سورۃ 2 آیت 44)   
3.مساجدمیں خرابیاں پیدا مت کرو-     (الکتاب :سورۃ 2 آیت 114) 
4. کسی کی اندھی تقلید مت کرو-     (الکتاب :سورۃ 2 آیت 170)   
5. رشوت  لینے کے طریقے مت ڈھونڈھو -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 188)   
6. صرف اُن سےلڑوجوتم سے لڑیں  -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 190)   
7. جنگ کے آداب کا خیال رکھو   -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 191)
8. اللہ کی قسم کھا کر جھوٹ مت بولو  ۔    (الکتاب :سورۃ 2 آیت 204)  
9. یتیموں کا خیال رکھو   -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 220)
10. مطلقہ   کو دیا گیا مہرواپس( زبردستی ) لینا حلال نہیں   -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 229)
11.مطلقہ کومعروف کے مطابق   متاع  (عدت  تک ) دینا لازم ہے    -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 241)
12. کیا اللہ کو قرض حسنہ دے سکتے ہو ؟     -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 245)
13. اللہ کی راہ میں رزق دو اِس سے پہلے کہ  تم رزق دینے کے قابل نہ رہو  -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 254) 
14. اپنی خیرات لوگوں کو دکھا نے کے لیئے اور احسان جتا کر ضائع مت کرو  -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 264)  
15. ضرورتمندوں کو تلاش کر کے اُن کی مدد کرو   -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 273)  
16. ربا کو بیع کا نام دے کر حلال نہ بناؤ، پریشانی والے کو سہولت دو ،حلال بنانے کے لئے فتوے  نہ ڈھونڈو  اور  مت کھاؤ -        (الکتاب :سورۃ 2 آیت 275) 
17. آپس میں قرض کے معاملات  لازماً   ، مکمل ایمانداری سے تحریرکرو-       (الکتاب :سورۃ 2 آیت 282)  
 18.  قرض  کی تحریر لکھتے یا لکھواتے وقت چالاکی مت کرو، گواہوں کی تعداد پوری کرو   -       (الکتاب :سورۃ 2 آیت 282)  
19.دورانِ سفر ادھار کی صورت میں ، رھن رکھواؤ تاکہ تم پر اعتماد قائم رہے،اِس سلسلے میں گواہی مت چھپاؤ    -       (الکتاب :سورۃ 2 آیت 283)  
20. تمام  رسولوں اور نبیوں  پر ایمان لاؤ     -       (الکتاب :سورۃ 2 آیت 285) 
21. کسی پر اس کی طاقت سے زیادہ بوجھ مت ڈالو -       (الکتاب :سورۃ 2 آیت 286) 
22. آپس میں تفرقہ مت ڈالو (الکتاب :سورۃ 3 آیت 103)
23. غصے کو پی جاؤ (الکتاب :سورۃ 3 آیت 134)
24. بدزبانی سے بچو -     (الکتاب :سورۃ 3 آیت 159)
25. کائنات کی تخلیق اور عجائبات پر گہری غوروفکر کرو -     (الکتاب :سورۃ 3 آیت 191)
26. مرد اور عورت کو اعمال کا صلہ برابر ملے گا -     (الکتاب :سورۃ 3 آیت 195)
27. والدین کے ترکے میں   سے بیٹے اور بیٹیوں کا حصہ دو -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 7)
28. اپنی ذرّیت  بے تحاشا بچوں کو  لاوارث مت چھوڑو  -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 9)
29. یتیموں کا مال کھا پر پیٹ کو جہنم مت بناؤ  -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 10)
30  . عورتوں کے زبردستی  وراث مت بنو -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 19)
31. ایک بیوی کو چھوڑ کر دوسری بیوی لاتے وقت پہلی بیوی کو دیا گیا مال بہتان لگا کر واپس مت لو   -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 20)
32. تجارت کے علاوہ ، ایک دوسرے کا مال ناجائز طریقے سے مت کھاؤ -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 29)
33. مرد خاندان کا حکمران ہے-     (الکتاب :سورۃ 4آیت 34)
34. بخیلی و کنجوسی مت کرو (4:37)
35.  نہ خود بخیل بنو  اور نہ دوسروں کو سبق پڑھاؤ  -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 37)
 36. حسد مت کرو (4:54)
37. لوگوں  کا حق ، تمھارے پاس اُن کی امانت  ہے اُنہیں واپس کر دو ! -     (الکتاب :سورۃ 4 آیت 58)
 38. منصف بننے پر لوگوں کے درمیان انصاف کرو ! -     (الکتاب :سورۃ 4 آیت 58)
 39. کسی مؤمن کو عمداً قتل مت کرو ، ورنہ ہمیشہ کے لئے جہنم میں رہوگے  -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 93)
40. الکتاب سے ،اللہ کے احکام پر عمل کرواتے وقت خیانت مت  کرو  -     (الکتاب :سورۃ 4آیت 105)
41. عدل و انصاف پر مضبوطی سے جم جاؤ، یہاں تک اپنے خلاف بھی فیصلہ  دو -     (الکتاب :سورۃ 4 آیت 135)
42. گناہ اور ظلم وزیادتی میں تعاون مت کرو-     (الکتاب :سورۃ 5آیت 2)
43. نیکی اور بھلائی میں تعاون کرو -     (الکتاب :سورۃ 5آیت 2)
44. اللہ  نے مردہ جانور،خون،خنزیرکا گوشت مت کھاؤ  ممنوع ہیں  -     (الکتاب :سورۃ 5آیت 3)
45. دشمنی کے باوجود ، عدل و انصاف پر قائم رہو -     (الکتاب :سورۃ 5آیت 8)
46. جرائم کی سزا ، جرم کا کفارۃ ہے اور توبہ دوبارہ جرم نہ کرنے کا عہد -     (الکتاب سے توبہ کا میعار   )
47.یہود و نصاریٰ کو اولیاء مت بناؤ ورنہ اُن جیسے ہوجاؤ گے -     (الکتاب :سورۃ 5آیت 51)
48. شراب ،  منشیات  اور آسان کمائی سے بچو  -     (الکتاب :سورۃ 5آیت 90)
49. خبیث اور طیب برابر نہیں ، خبیث کی کثرت سے مرعوب مت ہونا-     (الکتاب :سورۃ 5آیت 100)
50. من دون اللہ کے مانے والوں  کو بُرا مت کہو وہ دشمنی میں  اللہ کو بُرا کہیں گے  -     (الکتاب :سورۃ 6آیت 108) 
51 . اقوالِ زریں ، کو حتمی سچائی مت سمجھو   -     (الکتاب :سورۃ 6آیت 116)
52. اکثریت میں ہونا سچائی کا جواز نہیں  (زبانِ خلق نقارہءِ خدا نہیں) -     (الکتاب :سورۃ 6آیت 116)
 53. خوب کھاؤ پیو مگر حد سے تجاوز نہ کرو  -     (الکتاب :سورۃ 6آیت 141)
54. لوگوں کو دھوکہ دینے کی خاطر ناپ تول میں کمی مت کرو -     (الکتاب :سورۃ 6آیت 152) 
55. زمین پر فساد مت پھیلاؤ-  (الکتاب :سورۃ 7 آیت  56)  
56. دوسروں کی غلطیاں معاف کرو، جاہلوں سے دور رہو   -  (الکتاب :سورۃ 7 آیت 199)  
57. ضعیف لوگوں کی طیب رزق سے مدد کرو -  (الکتاب :سورۃ 8 آیت 26)
58. عہد کرو تو ، مسلمان  کیا مشرکوں سے بھی عہد نبھاؤ   -     (الکتاب :سورۃ 9 آیت 4)   
59. اگر مشرک بھی تم سے حفاظتی پناہ مانگے اُسے دو  اور حفاظت کرو، لیکن اُسے  یہ کلام اللہ ضرو سناؤ     ، کہ اللہ کے حکم کے مطابق میں یہ پناہ دے رہا ہوں -     (الکتاب :سورۃ 9 آیت 6)
60. توبہ مانگنے سے پہلے اللہ کی راہ میں صدقہ دو  -     (الکتاب :سورۃ 9 آیت 103)
61.  حکمت اور بہترین وعظ سے لوگوں کو ربّ کے راستے میں دعوت دو اور احسن طریقے سے مجادلہ کرو -   (الکتاب :سورۃ 16 آیت 126)
62.   جلد بازوکسی دوسرے کے  برائی ایسے مت مانگو جیسی اپنے لئے اچھائی مانگتے ہو  -   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 11)
63.والدین کا احترام اور ان کی فرمانبراداری کرو اور والدین کی بے ادبی سے بچو اور اُن کے سامنے اُف تک نہ کہو-   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 23)
64.  رشتہ دار ، مسکین اور مسافر کا حق اُس کو دے دو -   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 26)
65. کنجوسی اور فضول خرچی سے اجتناب کرو -   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 29)
66. مفلسی و غربت کے خوف سے اولاد کا قتل مت کرو -   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 31)
67. خبردار زنا کے قریب کسی صورت میں نہیں جانا -   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 32)
68. زمین پر اترا کر مت چلو ، نہ زمین کو پھاڑ سکتے ہو نہ پہاڑوں  کی اونچائی کو چھو سکتے ہو-   (الکتاب :سورۃ 17 آیت 37)
69. متکبر لوگوں سے نرمی سے بات کرو -   (الکتاب :سورۃ 20 آیت 44)
70.لوگوں کی عبادت گاہوں کو مسمار مت کرو -  (الکتاب :سورۃ 22 آیت 40)
71. دوسروں کے گھروں میں بلا اجازت مت داخل ہو -  (الکتاب :سورۃ 24 آیت 27) 
72. اجازت کے بغیر کسی کی خواب گاہ   میں داخل نہ ہو  -  (الکتاب :سورۃ 24 آیت 58)
73. عباد الرحمٰن بن کر زمین پر عاجزی و انکساری سے چلو  -  (الکتاب :سورۃ 25 آیت 63)  
74. عباد الرحمٰن بن کررزق تقسیم کرو تو اسراف اور کنجوسی کے درمیان رہو  -  (الکتاب :سورۃ 25 آیت 68) 
75.  قتل  زنا  اور زنا کو اپنے اوپر معلق مت کرواؤ -  (الکتاب :سورۃ 25 آیت 68) 
76. بیہودہ گوئی میں شامل مت ہو وہاں سے ہٹ جاؤ  -  (الکتاب :سورۃ 25 آیت 72)  
77.قومِ لوط کی طرح لونڈے بازی  مت کرو   -  (الکتاب :سورۃ 29 آیت 29) 
78. اپنے  والدین ، خصوصاً والدہ کا احسان مت بھولو -  (الکتاب :سورۃ 31 آیت 14)  

79. انسانوں میں رہو ،  تکبر مت کرو  -  (الکتاب :سورۃ 31 آیت 18)
80. گدھے کی طرح آواز نکالنے کے بجائے اپنی آواز پست رکھو  -  (الکتاب :سورۃ 31 آیت 19)
81. محمدﷺ کو اپنا دادا  یا نانا  مت بناؤ  ، رسول اللہ اور خاتم النبیین سمجھو -  (الکتاب :سورۃ 33 آیت 40)
82. کزن میرج  کی اجازت صرف  النبی کو ہے  ، مت کرو -  (الکتاب :سورۃ 33 آیت 50)
83. عورتیں ، اذیت سے بچنے کے لئے ،اپنے آپ کو ڈھانپ کر گھر سے باہر نکلیں   -  (الکتاب :سورۃ 33 آیت 59)
 84. لوگوں سے ٹھوس بات کرو     -  (الکتاب :سورۃ 33 آیت 70)
  85. ڈرو ، جب تمھارے کان ، آنکھیں اور کھالیں تمھارے گناہوں کی گواہی دیں گی    -  (الکتاب :سورۃ 41 آیت 20)
86.اپنے تمام کام  مشورے سے سرانجام دو      -  (الکتاب :سورۃ 42آیت 38)
87. کسی جھگڑے کی صورت میں لوگوں کے درمیان صلح کراؤ -  (الکتاب :سورۃ 49آیت 9)
88.لوگوں کو بُرے القاب مت دو  اور نہ  دوسروں کا مذاق  اڑاؤ -  (الکتاب :سورۃ 49آیت 11)
89. گمان مت کرو ،ایک دوسرے کے بھید نہ ٹٹولا کرو اور کسی کی غیبت مت کرو  -  (الکتاب :سورۃ 49آیت 12)
90. اپنے  قبیلے اور علاقے کو اپنا افتخار مت بناؤ  -  (الکتاب :سورۃ 49آیت 13)
91. منہ سے نکلنے والی ہر بات  ریکارڈ ہو جاتی ہے  -  (الکتاب :سورۃ 50آیت 18) 
92. امام الناس ابراہیمﷺ  کی طرح مہمانوں کا احترام کرو  -  (الکتاب :سورۃ 51آیت 24) 
93. اللہ کی آیت کو نہ جھٹلاؤ اور نہ کفر کرو ۔ پنے مال میں سے خیرات کرو   -  (الکتاب :سورۃ 57آیت 19)
94.   رہبانیت مت اختیار کرو     -  (الکتاب :سورۃ 57آیت 27)
95. مجالس میں ، مجلس کے اداب  رکھو       -  (الکتاب :سورۃ 58آیت 11)
 96. مؤمنات النبی سے کی گئی بیعت پر قائم رہیں  -  (الکتاب :سورۃ 60 آیت  12)
97.وہ بات  مت کہو جس پر خود فعل  نہیں کرسکتے ، یہ نہایت برا ہے   -  (الکتاب :سورۃ 61 آیت  2)  
 98. مسیح عیسیٰ ابنِ مریم کے حوارین کی طرح انصار اللہ بن جاؤ  -  (الکتاب :سورۃ 61 آیت  14)   
99. اپنے آپ کولالچ سے پاک رکھو  -  (الکتاب :سورۃ 64 آیت  16)  
100. رسول اللہ ، کی اسوہءِ حسنہ  ، اختیار  کرو-  (الکتاب :سورۃ 60آیت 6)
 ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
  اللہ کے احکامات جن کا فہم 100  نکات میں لکھا ہے اُن کی آیات کا حوالہ سامنے دیا ہے ، شائد آپ کا فہم وہ نہ  ہو لیکن کیا:
٭- اِن آیات پر محمدﷺ  نے 100 فیصد عمل نہیں   کیا ؟
٭-    محمدﷺ کے عمل پر صحابہؓ  کرام گواہ نہیں ؟
٭- اللہ محمدﷺ کے عمل گواہ نہیں ؟
اگر ہاں تو یقین مانیں، کہ محمدﷺ اللہ کے الدین پراللہ کی ہدایت پر  اظہار کرتے ہوئے خود کو   انسانوں اور   ایمان والوں کے سامنے  اب بھی مکمل ظاہر کرتے  ہیں ، کیوں کہ ہم یہی کہتے ہیں کہ محمدﷺ  اپنے قول و فعل  کا مکمل نمونہ ہیں  !
هُوَ الَّذِي أَرْسَلَ رَسُولَهُ بِالْهُدَى وَدِينِ الْحَقِّ لِيُظْهِرَهُ عَلَى الدِّينِ كُلِّهِ وَكَفَى بِاللَّهِ شَهِيدًا[48:28]
وہ ، جس نے اپنے رسول کو ارسال کیا الْهُدَى  اور دِينِ الْحَقِّ کے ساتھ ، تاکہ وہ    الدِّينِ پر اُس کے لئے کُل ظاہر ہوتا ہے  ، اور   اللہ کے ساتھ  شہادت کافی ہے  ۔
لیکن کیا   ہمیں  بالا 100 نکات کو سمجھنے کے لئے 100 کتابوں کی ضرورت پڑے گی !

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔