میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعہ، 13 مارچ، 2015

زمین پر خلیفہ کون بنا ؟

آفاقی سچ ہے ۔
يَا دَاوُودُ إِنَّا جَعَلْنَاكَ خَلِيفَةً فِي الْأَرْضِ  :-


يا داؤود !بے شک   ہم نے تجھے     الارض میں خلیفہ قرار دیا  !  
(
صرف دو وجوھات  کی بنیاد پر  )

 

1-
فَاحْكُم بَيْنَ النَّاسِ بِالْحَقِّ
پس  انسانوں کے درمیان الحق  سے حَکم  کر !   (الحق الکتاب میں درج ہے )

2-
وَلَا تَتَّبِعِ الْهَوَى فَيُضِلَّكَ عَن سَبِيلِ اللَّهِ

    اور اُن کی الھویٰ ( اپنے فائدے  کے حکم)  کی اتباع مت کر ! وہ ( اُن فائدے  کے حکم)  تجھے سبیل اللہ  میں سے ضلالت( کی طرف کر) دیں گے إِنَّ الَّذِينَ يَضِلُّونَ عَن سَبِيلِ اللَّهِ لَهُمْ عَذَابٌ شَدِيدٌ بِمَا نَسُوا يَوْمَ الْحِسَابِ  آیت (26) ص (38)

بے شک وہ  جو سبیل اللہ  میں سے ضلالت( کی طرف) ہوتے ہیں ۔ اُن کے لئے  شدید عذاب ہے ، اس لئے کہ وہ یوم الحساب کو بھول گئے !

اِس پوری کائینات میں
داؤود ! کو اللہ نے  الارض میں خلیفہ قرار دیا   ، کیوں ؟
کیا خوبی تھی  داؤود میں ؟


وَوَهَبْنَا لَهُ إِسْحَاقَ وَيَعْقُوبَ كُلًّا هَدَيْنَا وَنُوحًا هَدَيْنَا مِن قَبْلُ وَمِن ذُرِّ‌يَّتِهِ دَاوُودَ وَسُلَيْمَانَ وَأَيُّوبَ وَيُوسُفَ وَمُوسَىٰ وَهَارُ‌ونَ وَكَذَٰلِكَ نَجْزِي الْمُحْسِنِينَ ﴿الأنعام: 84﴾

ہم نے اُسے (ابراہیم کو) اسحٰق  اور یعقوب  ھبہٰ کئے کل کو ہم نے ہدایت دی ۔ اور قبل میں سے  نوح کواور اُس  (ابراہیم) کی ذریّت    داؤود  اور سلیمان اور ایّوب اور یوسف اور موسیٰ اور ھارون     کو ہدایت دی ، اور اِس طرح ہم محسنین کو جزاء دیتے ہیں 


 محمد رسول اللہ کو اللہ نے کیا حکم دیا ؟ 


أُولَـٰئِكَ الَّذِينَ هَدَى اللَّـهُ ۖ فَبِهُدَاهُمُ اقْتَدِهْ ۗ قُل لَّا أَسْأَلُكُمْ عَلَيْهِ أَجْرً‌ا ۖ إِنْ هُوَ إِلَّا ذِكْرَ‌ىٰ لِلْعَالَمِينَ ﴿الأنعام: 90﴾ 
یہ وہ لوگ ہیں جنھیں اللہ نے ھدایت دی  پس اُن کی ہدایت کی اقتدا کر! ۔ کہہ میں تم سے اُس (اقتدا)  پر  کسی اجر کا سوال نہیں کرتا ۔

محمد رسول اللہ جن انبیاء کو اللہ نے ہدایت دی اُن سب کی  اقتدا کا مرکز بنے ، جن میں ھدایت ِ خلافتِ داؤد  بھی تھی ۔ 
آپ ﷺ پر  الحمد سے لے کر والناس تک دی جانے والیهَدَى اللَّـهُ ۖ     مرکوز ہوکر   رحمت للعالمین بنی ۔

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔