میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

بدھ, اپریل 22, 2015

کراچی کا حلقہ این اے 246

کراچی کا حلقہ این اے 246 نے پورے شہر کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، ہرجگہ یہی بحث چل رہی ہے۔ چائے،کولڈ ڈرنک اورکھانے سے لے کر بڑی بڑی شرطیں لگ رہی ہیں۔ ہر کسی کی زبان پر ایک ہی سوال ہے۔۔۔۔۔ ضمنی انتخاب کون جیتے گا؟

حلقہ این اے 246کا جائزہ لیں تو یہ نشست 1988ء سے ایم کیوایم حاصل کرتی آرہی ہے۔
1985ء میں اس نشست سے غیرجماعتی انتخاب میں جماعت اسلامی کے سید مظفر ہاشمی کامیاب ہوئے۔
1970ء اور 1977ء میں اس نشست سے جماعت اسلامی کے پروفیسر عبدالغفور احمد (مرحوم) بھاری اکثریت سے کامیاب ہوئے تھے۔
1993ء میں ایم کیوایم نے قومی اسمبلی کے انتخاب کا بائیکاٹ کیا تھا
جس کے نتیجے میں ایک بار پھر اس نشست پر جماعت اسلامی کے سید مظفر احمد ہاشمی کامیاب ہوئے۔
1997ء میں ایم کیو ایم کامیاب ہوئی۔
2002ء کے عام انتخاب میں ایم کیوایم اور جماعت اسلامی کا ون ٹو ون مقابلہ ہوا تھا۔ ایم کیوایم کے امیدوار نے 52ہزار اور جماعت اسلامی کے امیدوار نے32ہزارووٹ حاصل کئے تھے۔
2008ء میں جماعت اسلامی نے بائیکاٹ کیااور ایم کیو ایم نے میدان مارا۔
2013ء کے عام انتخاب میں ایم کیوایم کے امیدوار نبیل گبول کامیاب ہوئے اورتحریک انصاف کے امیدوار نے31ہزار جبکہ جماعت اسلامی کے راشد نسیم نے 10ہزارووٹ حاصل کئے


این اے 246 میں کل ووٹرز تین لاکھ ستاون ہزار آٹھ سو ایک ہیں جن میں ایک لاکھ چھیانوے ہزاردوسو تیس مرد اور ایک لاکھ اکسٹھ ہزار پانچ سو اکھترخواتین ہیں ۔کل پولنگ اسٹیشن 213 ہیں جن میں پندرہ مرد ‘ پندرہ خواتین اور 183مشترکہ پولنگ اسٹیشن ہیں۔ مردوں کے 402اور خواتین کے 367 پولنگ بوتھ قائم کیے گئے ہیں


۔211 مرد ‘ 2 خواتین پریزائیڈنگ افسران اور 769پولنگ افسران ڈیوٹی انجام دیں گے۔ الیکشن کمیشن نے رینجرزکو پولنگ اسٹیشن کے اندر اور باہر تعینات کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ 

 

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔