میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

بدھ، 8 جولائی، 2015

بڑے آپریشن سے بچے کی پیدائش

بڑے آپریشن سے بچے کی پیدائش ۔۔۔۔۔۔ خطرے کا نشان
عورتوں کے لئے ایک معلوماتی تحریر
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔




برٹش میڈکل جرنل میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں ڈاکٹر میگی لکھتی ہیں:-
عورتوں جس قدر ممکن ہو نارمل ڈیلیوری کی حوصلہ افزائی کرنی چائیے ۔ برطانیہ میں کچھ عرصہ سے بڑے اپریشن کے ذریعے بچے کی پیدائیش کی شرح بڑھتی جا رہی ہے ۔ جو عورتوں میں اک فیشن ک صورت اختیار کر گیا ہے-

اک سروے کے مطابق برطانیہ میں ہر چوتھا بچہ بڑے اپریشن کی پیداوار ہے ، 
عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ اگر میڈیکل مسائل کی بنا پر یہ آپریشن ہو رہے ہیں تو کل آبادی کازیادہ سے زیادہ 10 فیصد ایسا ہونا چاہئے ۔
 تحقیق سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ اگر ایک دفعہ یہ آپریشن کرا لیا جائےتو آیندہ کے لئے اس کے امکانات بڑھ جاتے ہیں ۔
 

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔