میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعہ، 11 مارچ، 2016

گلائیڈنگ : ایک کھیل

کیا آپ نے گدھ کو اُڑتے دیکھا ہے ؟
کس طرح وہ دوڑ کر اپنا وزنی جسم فضا میں بلند کرتا ہے اور پھر آسانی سے اُڑ کر فضاء میں بلند ہو جاتا ہے ۔ اپنے پروں کی طاقت (انجن) سے وہ ہوا  میں بلند ہوتا ہے اور ہوا کے سہارے پر اپنے ساکن پروں (ونگ) کی مدد سے تیرتا ہے ۔ اُس وقت اُس پر اصولِ حرکت و اصول اُڑان کے باعث چار طاقتیں عمل کرتی ہیں ۔
جہاز میں فضاء میں جاکر پیرا شوٹ سے چھلانگ لگانے والوں پربھی انہی طاقتوں کا مجموعہ اثر کرتا ہے ۔
1۔  کششِ ثقل ۔ زمین کی طرف کھینچنے کی قوت . Gravitational Pull
2۔  ہوا کی اوپر کی طرف اٹھان ۔ Lift
3۔  ہوا کی مزاحمت . Drag
4 ۔ دھکہ ۔ Push or Thrust۔

پیرا شوٹ سے چھلانگ لگانے والوں کا مقصد زمین پر ایک خاص مقام پر اترنا ہوتا ہے ۔ جو چھلانگ لگانے کے ایک کلو میٹر کے دائرے تک محدود ہوتا ہے ، لیکن اگر ہو تیز ہو تو یہ دو کلو میٹر تک بھی پھیل سکتا ہے ۔
دوسری جنگِ عظیم میں فوجیوں کا دشمن کے علاقوں میں پیرا شوٹ سے اترنے کے کئی آپریشن ہوئے اور پیرا شوٹ میں بھی جدت پیدا کی گئی ، فوجی سامان کو نیچے دشمن کی صفوں کے پیچھے گرانے کے لئے سادہ پیرا شوٹ ہی رہے ، لیکن فوجیوں کو اپنی مرضی کی جگہ پر اترنے کے لئے ، پیرا شوٹ میں کئی تبدیلیاں کی گئیں اور بالآخر ایسا پیرا شوٹ بنایا گیا ، کہ جس کی بدولت ، ھدف سے پیچھے اتارے گئے فوجی ، ہوا کے دوش پر پیرا گلائیڈنگ کرتے اپنے ھدف کے تیس میٹر سے بھی کم علاقے میں اترنے لگے ۔

 فوجیوں میں ھدف کے نزدیک تر اترنے کے مقابلے ہونے لگے اور اُن میں ایسے ایسے ماہر پیدا ہوئے ، جس پیرا شوٹ کو اپنی مرضی سے کنٹرول کرتے ہوئے ، زمین پر رکھی میز پر اترنے لگے ، یوں پیرا شوٹ سے گلائیڈنگ کرتے اترنا ۔ ایک کھیل کی صورت اختیار کر گیا ۔ جس میں یورپی تو کیا پاکستانی خواتین بھی پیچھے نہیں رہیں ۔

پاور انجن کے ساتھ فضا میں اُڑنا بھی انسانی ہمت ، بے خوفی کی بدولت سنسنی تجربے کا حصول بن گیا ۔ اور انسان فضا کی بلندیوں میں تنہا پرندوں کی طرح سیر کرنے لگا ۔


 موٹر بوٹ سے فضاء  پیرا سیل ،ایک تفریح کا ذریعہ بن چکا ہے ۔


٭    ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭  ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭٭ ٭٭ ٭ ٭ ٭ ٭  ٭ ٭٭٭٭  ٭
٭                                                 -        پیرا گلائیڈنگ کیا ہے ؟
 ٭                                                 -       پیرا گلائیڈنگ ایک کھیل  
٭                                                 -     تھیوری ۔ پیرا گلائیڈر فلائیٹ ۔ 

 ٭                                                 -    پیرا گلائیڈر کنٹرولز
 ٭                                                 -  پیرا گلائیڈرز ۔ گراونڈ ٹریننگ 
 ٭                                                 -  بلندی سے پیرا گلائیڈنگ 

٭                                                 -    پیرا گلائیڈنگ . سوالات
٭    ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭  ٭ ٭ ٭ ٭ ٭ ٭٭ ٭٭ ٭ ٭ ٭ ٭  ٭ ٭٭٭٭  ٭

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔