میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

بدھ، 11 جنوری، 2017

International Date Line



The pic above shows two islands facing each other silently. These are not ordinary islands. They are located in the Bering Straits.
They belong to two Super Powers - Russia and USA and represent two different days of the calendar at any given time because the international date line passes through them.

They are just 3 km apart from each other.

The bigger one called Big Diomede with an area of 29 km2 and no population, belongs to Russia and is part of Siberia - 25 km from main land.
dInternational Date Line is about 1.5 km east of this island.

The smaller one is called Little Diomede with an area 7.3 km2, a population of 170, and belongs to the USA and is part of Alaska - 25 km from main land.

International Date Line is about 1.5 km west of this island.

On a clear day, looking at Big Diomede from Little Diomede - one can see 'tomorrow' as the time difference between the two islands is exactly 24 hrs.


The New day sun rises in Big Diomede from Little Diomede  eg 01st Jan 2017
but the same sun when sets from Little Diomede to Big Diomede is ends 31st Dec 2016.





خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔