میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

منگل، 14 فروری، 2017

نظامِ انصاف کے آوا گون کی کوششیں


1- دہشت گردی کے مجرموں کے لئے سزائے موت ۔ 
2- سپیشل ٹرائل کورٹس کا قیام ، جن کی مدّت دوسال کے لئے ہو گی ۔
3- عسکری تنظیموں اور گروپس کی ملک میں آپریشن کی اجازت نہیں ہوگی ۔
4- دہشت گردی کئ خلاف نیکٹا ادارے کو مضبوط بنایا جائے گا۔
5-نفرت انگیز، انتہا پسندی ، فرقہ پرستی اور عدمِ برداشت پر تحریری مواد ، اخبارات اور میگزین کے خلاف سخت ایکشن۔
6- دہشت گردوں اور دہشت گرد تنظیموں کو مالی معاونت کی پابندی۔
7- پابندی لگائی گئی جماعتوں کی دوبارہ فعالیت کے خلاف عمل یقینی بنانا ۔ 
8- دہشت گردی سے نپٹنے کے لئے ، کلّی وقف فورس کا قیام ۔
9- مذہبی قتال کے خلاف مؤثر اقدام ۔
10- مذہبی سمینار کی رجسٹریشن اور اُن کو ریگولیٹ کرنا
11-  دہشت گردوں اور دہشت گرد تنظیموں کو پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر بڑھا چڑھا کر بیان کرنے پر پابندی ۔
12۔ فاٹا میں ایڈمنسٹریٹو اور ڈویلپمنٹ کاموں پر فوری توجہ اور آئی ڈی پیز کی دوبارہ اُن کے علاقوں میں واپسی ۔
13- دہشت گردوں کے کمیونیکیشن نیٹ ورک کو مکمل ختم کرنا ۔
14- انٹرنیٹ اور سوشل، میڈیا کے دہشت گردی کے استعمال کے لئے فوری پابندی ۔ 
15- پنجاب کے اندر بغاوت ناقابلِ برداشت  ۔ 
16- کراچی میں جاری آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچانا ۔
17- بلوچستان گورنمنٹ کو تمام سٹیک ہولڈرز کی دوبارہ سیاسی ذمہ داریوں کو پورا کرنے کا مکمل اختیار دینا  ۔
18- مذہبی دہشت گردوں سے سختی سے نمٹنا ۔
19- افغان مہاجرین کی رجسٹریشن کے لئے ایک مکمل اور جامع پالیسی کی تدوین  ۔
20- مجرمانہ نظامِ انصاف کا دوبارہ احیاء ۔

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔