میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

منگل، 28 فروری، 2017

Talking Frog & a Veteran!

Dedicated to All Veterans:

A 75 year old Retired Army Officer  had one hobby - he loved to fish.

He was sitting in his boat the other day when he heard a voice say:
 'Pick me up'. He looked around and couldn't see anyone.

He thought he was dreaming when he heard the voice say again, ''Pick me up'.

He looked in the water and there, floating on the top, was a frog.

The Officer said, 'Are you talking to me'?

The frog said, 'Yes, I'm talking to you. Pick me up, then kiss me; and I'll turn into the most beautiful woman you have ever seen. I'll make sure that all your friends are envious and jealous, because I will be your bride!'

The Retired Officer looked at the frog for a short time, reached over, picked it up carefully and placed it in his shirt pocket.

The frog said, 'What, are you nuts? Didn't you hear what I said?'

I said, 'Kiss me, and I will be your beautiful bride'.

He opened his pocket, looked at the frog and said:

'Naaah. At my age, I'd rather have a talking frog listen to my stories'.

WITH AGE - COMES WISDOM

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔