میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

بدھ, مئی 17, 2017

لبرل ازم کی جامع تعریف !


بالا پکچر پوسٹ پر کوئی کمنٹ دینے سے پہلے ،  اللہ کے ، اِس اٹل قانون پر بھی غور فرمائیں !

جو وہ محمدﷺ کے توسط سے ہمیں روازنہ سناتا رہتا ہے ، اگر ہم توجہ دیں تو ! ۔ 
 ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـٰنِ الرَّحِيمِ
اسمِ صفت اللہ کے ساتھ جو الرحمان اور الرحیم ہے !
قُلْ يَا أَيُّهَا الْكَافِرُونَ ﴿1﴾
کہہ : ارے او   کافرو   !   ۔ سنتے ہو ؟
لَا أَعْبُدُ مَا تَعْبُدُونَ ﴿2﴾
جنت میں جانے کے لئے تم  جس اللہ کی عبادت کرتے ہو میں  اُس اللہ کی عبادت نہیں کروں گا !
وَلَا أَنتُمْ عَابِدُونَ مَا أَعْبُدُ ﴿3﴾
اور نہ ہی تم  اللہ کی  جنت میں جانے کے لئے  اللہ  کی ویسی عبادت کرو گے جیسی  عبادت میں کرتا ہوں !
وَلَا أَنَا عَابِدٌ مَّا عَبَدتُّمْ ﴿4﴾
اور نہ ہی میں اُس اللہ کا عابد بنوں گا جس اللہ کے تم عابد ہو !
وَلَا أَنتُمْ عَابِدُونَ مَا أَعْبُدُ ﴿5﴾
اور نہ ہی تم اُس اللہ کے عابد بنو گے جس اللہ کا میں عابد ہوں !
لَكُمْ دِينُكُمْ وَلِيَ دِينِ ﴿6﴾ الکافرون
تمھارے لئے تمھارے اللہ اور رسول کا بنایا ہوا دین اور میرے لئے میرے اللہ اور رسول کا بنایا دین-
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭


نوٹ: فہم الایات ، مہاجرزادہ کا ہے ، جس کا ماننا آپ پر لازم نہیں ۔ لیکن اللہ کی آیات نہ ماننے پر، آپ اپنی موجودہ پوزیشن پر غور کرسکتے ہیں ۔
مہاجرزادہ کی  رائے میں ،
اللہ اپنی اور اپنے رسولوں کی توہین کرنے والوں سے انتقام لینے میں اپنے قواعد ِ جبر و غضب کے مطابق سریع الحساب ہے ۔
اسوۃءِ رسول اللہ پر قدم رکھنا ہے تو آپ نے اول مسلم بن کراللہ کی وہ آیات انسانوں پر تلاوت کرنا ہیں۔ جن پر آپ خود عمل کرتے ہو ۔  وہ فہم بتانا ہے کہ کہ جو آپ کی روزمرہ زندگی میں شامل ہے ۔ جس کے لئے کوئی بہانہ  نہیں۔کوئی  حیلہ نہیں اور  کوئی جواز بھی نہیں اور آپ کی مرضی کے مطابق کوئی استثنا  نہیں  ۔
سوائے اُن رعایات کے جو اللہ نے الکتاب میں  درج کی ہیں  !

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔