میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعرات، 8 جون، 2017

گالف اور گرمیوں کا نزلہ !

حسبِ معمول ، 5 بجے شام گالف کھیلنے, میں اور فواد ، فواد کی رام پیاری پر گالف گراونڈ  کے لئے نکلے ، آسمان پر بادل تھے ، ٹھنڈی ٹھنڈی ہوا چل رہی تھی ،
گالف گراونڈ پہنچے ، جب " ٹی " 10 پر پہنچے تو مرگلہ پہاڑیوں کی طرف سے تاریک بادل گالف گروانڈ کی طرف آرہے تھے - 
مارشل نے کہا ،" سر بارش آ رہی ہے "
" آنے دو آج بارش میں کھیلیں گے " فواد نے کہا ۔
جب ہم تیرواں ھول کھیل چکے ، تقریباً اندھیرا چھا گیا تھا اور ھوا میں تیزی آگئی تھی ، ہم سے آگے کھیلنے والوں نے ھول 14 پر شاٹس مار کر واپسی کا اعلان کیا ،
فواد نے ٹی شاٹ لگائی ،
" میری بال دیکھی " اُس نے چلا کر پوچھا ۔
میں نے عینک جیب میں رکھ لی تھی کیوں کہ بارش سے دھندلا رہی تھی ۔ بولا " سامنے ہی گئی ہوگی "
اندھیرا ، تیز ہوا ، اُڑتے پتے اور گرد ، خیر چھوٹی شاٹ ماری ، گو کہ ھول 14 ، پار 5 ہے اور فاصلہ 544 گز ، ہول کے پاس خوفناک نالا ، نالے کے دوسری طرف بڑے بڑے درخت ۔
جب بال کے پاس پہنچا تو بارش موسلا دھار شروع ہو چکی تھی ، یہ تصویر کھینچے اور موبائل کو گالف بیگ کی جیب میں ڈال دیا ۔
 اور شاٹ لگائی ، جو سامنے درخت سے ٹکرا کر نالے میں بائیں طرف گر گئی !
پھر بارش میں بھیگتے ہوئے ۔ تمام ہول کھیلے اور مکمل بھیگ چکے تھے واپسی میں کھلی جیب اور ہم تھے اور دائیں بائیں سے گذرنے والی تیز رفتار کاروں سے اُڑنے والے تمام چھینٹے بھگتا رہے تھے ،

اور اب بیٹھا، گرمیوں کے نزلے کا شکار ہو کر ، چھینکیں مار رہا ہوں!

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔