میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعہ، 1 جون، 2018

سیتا وائیٹ کا مقدمہ کیا تھا ؟

کروڑ پتی     مینوفیکچرر   ہل کے رہنے والے  لارڈ  گورڈ  وہائیٹ   کی بیٹی سیتا وہائٹ  نے 1986 میں پاکستانی کرکٹر عمران خان سے دوستی  کی ،  سیتا وائیٹ  کے مطابق،
"   ہماری دوستی کے نتیجے میں جب میں حاملہ ہوئی تو میں نے کئی مہینوں تک عمران خان سے چھپایا ، جب اسقاط حمل کا خوف  ختم ہوا تو میں نے عمران خان کو بتایا کہ میں حاملہ ہوں ، عمران خان، پہلے تو غصہ ہوا کہ اُس کی اجازت کے بغیر اُس نے یہ قدم کیوں اٹھایا ؟  پھر کہا کہ چیک کرو لڑکی ہے یا لڑکا  ، اگر لڑکا ہوا تو میں کرکٹر بناؤں گا ، لیکن اگر لڑکی ہے تو اسقاط کروا دو ۔
میں اپنے پیٹ میں پلنے والی بچے کی محبت میں مبتلاء ہو گئی تھی اِس لئے میں عمران سے دور رہی ۔
جب میں نے اُسے بچی پیدا ہونے کا بتایا تو وہ مجھ پر بہت غصے ہوا  اور ہمارے تعلقات ختم ہو گئے ، میں کیلفورنیا میں  اکیلی اپنی بچی کو پالنے لگی ۔
میری بچی کو باپ کے نام کی بہت ضرورت تھی مگر عمران خان اُسے اپنی بیٹی تسلیم کرنے کے لئے تیار نہ تھا اُس نے مجھ پر بہت غلیظ الزامات لگائے ۔ گو کہ ہمارے معاشرے میں اِن کی کوئی اہمیت نہیں ہوتی ، اِس کے باوجود مجھے بہت غصہ آیا کہ یہ کیسا مرد ہے جو اپنی بچی کو اپنا نام نہیں دینا چاہتا ۔


ٹیریان جیڈ جب 6 سال کی ہو گئی تو میں نے عمران خان پر دباؤ ڈالنا شروع کیا کہ وہ ٹیریان کو اپنا نام دے ، کیوں کہ میں اُس کے باپ کا نام کاغذات میں اُس وقت تک نہیں لگا سکتی جب تک عمران  تحریری طور پر تسلیم نہ کرے ، مگر وہ کسی طور پر تیار نہ تھا ،  میں نے اُسے چیلنگ کیا کہ وہ اپنا ڈی این اے ٹیسٹ کروا لے تاکہ ، اُس کی سچائی ثابت ہو جائے کہ وہ ٹیریان کا باپ نہیں ، مگر وہ نہیں مانتا تھا ۔ جھگڑا 6 سال تک چلتا رہا ۔ ٹیریان لاس اینجلس کے سٹیٹ سکول میں پڑھتی رہی ۔ 
1995 میں   عمران خان  (پیدائش 1952) نے ، ارب پتی   فنانسر  گولڈ سمتھ کی بیٹی جمائما  مارسیلی (پیدائش 1974)  سے دھوم دھام سے شادی  کی جس کے بعد ، میری  یہ امید بھی  ختم ہو گئی کہ  ٹیریان کو کبھی اُس کے باپ کا نام مل سکے گا ؟

جب بھی وہ اپنے باپ کا پوچھتی تو میں اُسے ، عمران خان کی تصاویردکھاتی ، اکثر وہ عمران خان کی تصویر سینے سے لگا کر سو جاتی ، جس پر  میری بہن اینا لوئیسا واہائٹ کو عمران خان پر  سخت غصہ تھا ٹیریان جیڈ کا میں نے اُسے وارث بنایا تھا    اُس نے اپنی بھانجی  کو اپنے باپ کا نام دلانے کے لئے عمران خان کے خلاف  لا س اینجلس کی عدالت میں کیس کر دیا ، جس کا فیصلہ  جج نے 14 جولائی 1997 کو کیا  جس کے مطابق ، عدالت نے کہا کہ ،
 " عمران خان، 15 جون 1992 کو  سیتا وائیٹ سے پیدا ہونے والی  ٹیریان جیڈ کا باپ ہے !"
فیصلے کا عکس  :

فیصلے کے بعد عمران خان کو میں نے فیصلے کی کاپی ای میل کی ۔  میں نے عدالتی فیصلے  کے مطابق   ٹیریان  کے نام کے ساتھ خان کا اضافہ کیا ، کیوں کہ وہ پاکستان  کے ایک پٹھان کی بیٹی ہے ۔
ٹیریان کو باپ مل گیا لیکن کیا عمران خان اپنی بیٹی کو پہچان سکے گا ؟
فیصلے کے بعد  ، میر ا پروگرام پاکستان کی عدالت میں جانے کا تھا ، لیکن ایک دن اینا نے بتایا کہ عمران خان ، ٹیریان سے ملنا چاھتا ہے ۔
ٹیریان کی پیدائش  کے بعد پہلی بار  عمران نے ٹیریان سے ملنے کی خواہش ظاہر کی ، ٹیریان خان،    6 سال کی عمر میں اپنے باپ کو ملی ۔ اُس کی خوشی کا عالم دیکھا نہ جاتا تھا ۔




قارئین :
 2004   مئی میں ہارٹ اٹیک کی وجہ سے اچانک  فوت ہو گئی اور    اپنی  12 بیٹی ٹیریان خان کو اکیلا چھوڑ گئی ۔   اینا نے جمائما کو ٹیریان کے متعلق بتایا جس پر اُسے سخت صدمہ پہنچا  ، کیوں کہ وہ بھی کافی عرصہ باپ کے نام کے بغیر رہی تھی ، جمائما کے باپ جیمز گولڈسمتھ (1933-1997)  اور اُس کی ماں  لیڈی اینا بل(1934)  کے آپس میں تعلقات  جن کی وجہ سے وہ اور  اُس کے دو بھائی زیک اور بن پیدا ہوئے ۔ 1978 میں  جیمز گولڈ سمتھ  نے جمائما اور اُس کے دونوں بھائیوں زیک اور بن کو اپنا نام دیا ۔
22 جون 2004، کو مختلف وجوہات کی بنا پر جمائما نے عمران خان سے طلاق لے لی ۔لیکن بنیادی وجہ عمران خان کا  ٹیریان کا چھپانا تھا ۔  جمائما ایک ہمدرد خاتون ہے اور وہ بے باپ کے ہونے کے درد کو اچھی طرح جانتی ہے ، چنانچہ اُس نے فیصلہ کیا کہ وہ ٹیریان کو اُس کے دونوں بھائیوں کے ساتھ پالے گی ۔ گو کہ طلاق دیتے وقت عمران خان نے اُس سے لندن کا فلیٹ واپس لے لیا بلکہ بنی گالا میں اُس کے نام سے خریدی گئی ساڑھے تین سو کنال زمین اور عالی شان گھر بھی چھین لیا - 


ٹیریان کی تعلیم مکمل ہونے کے بعد جمائما ٹیریان  خان کو اپنے گھر لے آئی ۔

کیا ٹیریان خان ، پاکستان آکر عمران خان کے خلاف مہم چلائے گی؟

یہ بات کسی سے چھپی ہوئی نہیں کہ عمران خان  نے الیکشن 2008 اور 2013 کے نامزدگیوں کے فارمز میں اپنے دونوں بیٹوں کے نام  ظاہر کئے  لیکن ٹیریان کا نام چھپایا ۔
لاس اینجلس کورٹ کے اِس فیصلے کو عمران خان نے چیلنج نہیں کیا ۔

تو کیا ہم کہہ سکتے ہیں کہ عمران خان کا نعرہ  ایک جھوٹ ہے ؟

یا سیاسی سٹنٹ  ؟  کیوں کہ یہ نعرہ جہاں سے لیا گیا ہے  ، اُس کا پیغام ہے ۔
کیا عمران خان الکتاب کی اِس آیت جو روح القدّس نے  محمدﷺ کو مؤمین  کی ھدایت کے لئے بتائی، :
1۔  اُسے معلوم نہیں  ۔
2-وہاں تک نہیں پہنچا ۔
3- یا اُس کے سمجھانے والوں نے اُس سے چھپائی ؟
4- یا شائد ملاؤں نے اُسے بتایا ہو کہ یہ آیات1400 سال پہلے  کی ہے اور بیٹوں کے لئے ہے بیٹیوں کے لئے نہیں !

ادْعُوهُمْ لِآبَائِهِمْ هُوَ أَقْسَطُ عِندَ اللَّهِ فَإِن لَّمْ تَعْلَمُوا آبَاءَهُمْ فَإِخْوَانُكُمْ فِي الدِّينِ وَمَوَالِيكُمْ وَلَيْسَ عَلَيْكُمْ جُنَاحٌ فِيمَا أَخْطَأْتُم بِهِ وَلَكِن مَّا تَعَمَّدَتْ قُلُوبُكُمْ وَكَانَ اللَّهُ غَفُورًا رَّحِيمًا 
[33:5]
تم اُنہیں  اُن کے باپوں کے نام سے پکارو ! وہ اللہ کے نزدیک انصاف ہے ۔اگر تمھیں اُن کے باپ کا نام معلوم نہیں  پس وہ تمھارے  الدین میں بھائی ہیں  اور تمھارے موالی ہیں ، تم سے  (نام پکارنے میں ) خطا ہو گئی  تو تم پر کوئی گنا ہ نہیں  ، سوائے جو تمھارے قلب عمداً        (گناہ ) کرتے ہیں  ۔ اور اللہ(خطاؤں پر )    غفور اور رحیم ہے۔








خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔