میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

بدھ، 29 اگست، 2018

پوری دنیا میں تہلکہ

فواد چوہدری کی گوگل سرچ نے ، انٹر نیٹ کی پوری دنیا میں تہلکہ  مچادیا۔
 
فائبر گلاس انڈسٹری کے بعد  صنعت کاروں نے  اب  افریقہ کے جنگلوں میں 55 روپے فی کلو میٹر سے کم خرچ ہیلی کاپٹر تلاش کر لئے ۔ جن کی رفتار اور خرچہ ہم پلّہ  قرار دیا جا رہا ہے ۔ 
افریقی صنعت کار ہونا لولو بوگاڈا کپیرا   ، نئے پاکستان کے وزیر اطلاعات سے اپنی ہیلی کاپٹر پر ملنے کے روانہ ہونے کے لئے ہیلی پیڈ پر  ہاتھ ہلا کر  اپنے عوام کو الودع کہہ رہے ہیں ، اُنہیں امید کے کہ  پاکستان سے ہیلی کاپٹروں کی ڈیمانڈ کی وجہ سے اُن کی سٹیٹ میں ایک لاکھ افراد کو روزگار ملنے کی توقع ہے  ۔ اُن  کا خیال  تقریباً 50 ہزار نئے پاکستان کے عوام کو روزگار ملے گا  ۔

نئے پاکستان کے نئے وزیر اعظم کو  ہیلی  کاپٹر  کی ٹیکنیکل ڈرائینگ سمجھانے کے لئے  ، مشہور ماڈل کی مدد بھی لی گئی ۔


٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭


خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔