میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

فیس بک کے دیوانے

جمعرات، 27 ستمبر، 2018

ڈیجیٹل ڈکیتی -آپ کی مرضی سے


 ہمارے ایک نوجوان  کو موبائل پر کسی نامعلوم نمبر سے کال آئی۔
مسٹر فراڈ: " السلام و علیکم  ، مسٹر ۔۔۔۔۔۔۔۔   ہم آپ کے بینک  کے ہیڈ آفس سے بات کر رہے ہیں۔  براہ کرم اپنا شناختی کارڈ نمبر اور ATM کارڈ نمبر بتا دیں"

نوجوان: " آپ کون ہیں ؟ ، کہاں سے بول رہے ہیں ؟"
 مسٹر فراڈ: میں نے عرض کی کہ ہم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بنک سے بول رہے ہیں "
 نوجوان نے کہا ،"  لیکن یہ میرے بینک کا آفیشل فون نمبر نہیں ہے، میں مطلوبہ معلومات آپ کو کیوں دوں؟"
 مسٹر فراڈ: کوئی بات نہیں- ہم آپ کو بینک کے آفیشل فون نمبر سے کال کر لیتے ہیں"
 تھوڑی ہی دیر بعد   بینک کے آفیشل فون نمبرسے کال موصول ہوئی- البتہ فون نمبر سے پہلے 002 کا کوڈ لگا ہوا تھا- اس پر نوجوان  مطمئن ہو گیا کہ واقعی بینک سے کال آ رہی ہے-
مسٹر فراڈ: نے ایک بار پھر شناختی کارڈ نمبر اور ATM کارڈ نمبر مانگا-
 نوجوان نے پوچھا،: لیکن آپ مجھ سے  معلومات کیوں مانگ رہے ہیں؟"مسٹر فراڈ: نے بتایا : "  ہم آپ کے بینک اکاؤنٹ کو سیکیور کر رہے ہیں-"
 اس پر نوجوان مطمئن ہو گیا اور اُس نے مطلوبہ معلومات ، بنک کی طرف سے فون کرنے والے کو فراہم  کر دیں- کچھ دیر بعد نوجوان کے موبائل پر بنک کے نمبر سے  میسیج آیا۔
" انٹرنیٹ پر آپ کا OTP نمبر (One Time Processing ) اگلے دس منٹ کےلئے یہ ہے-(ایک پانچ ہندسوں  کا کوڈ مثلا  56432
آیا  )-
  مسٹر فراڈ نے دوبارہ  رابطہ کیا اور بولا،"  آپ کے پاس جو پانچ  ہندسوں  کا کوڈ بنک کی  طرف سے  آیا ہے وہ ہمیں بتا دیں"
نوجوان نے بلا جھجھک وہ نمبر  بتا دیا- 
بنک سے پھر میسج   آیا-
A/c XXXXX-****   XXX Amount 212,000.00 Debited /Web IBFT to XXX  A/c . . . .  . .. .  on Sep 19 2018 12:54PM STAN: XXXXX             /A/C Bal: 401.14
یوں اس نوجوان  کے اکاؤنٹ سے دو لاکھ بارہ ہزار روپے کسی نامعلوم اکاؤنٹ میں منتقل ہو گئے- 
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
احتیاطی تدابیر:
٭۔ بنک کی طرف سے فون آنے پر آپ اپنے آن لائن ٹرانسفر کاونٹ یا اے ٹی ایم کارڈ یا کریڈٹ کارڈ  کی تفصیلات مت دیں ۔ کیوں کہ بنک آپ سے یہ معلومات اُس وقت مانگتا ہے جب آپ بنک سے کسی پریشانی کے سلسلے میں رابطہ کرتے ہیں ۔
٭- موبائل فون پر  اپنے اکاؤنٹ کی تفصیلات کسی کو بھی ایس ایم ایس نہ کریں اور نہ ہی ای میل پر بھیجیں -
٭- اے ٹی ایم  سے کی جانے والی ٹرانزیکشنز کی معلومات ، موبائل اور ای میل پر وصول ہوتی ہیں اُنہیں دیکھنے کے بعد ،  کمپیوٹر میں ڈاؤن لوڈ کر لیں اور ای میل سے ڈیلیٹ کر لیں ، کیوں کہ ای میل اکاونٹ ھیک ہونے کے بعد ، آپ پر کسی وقت بھی  ھیکرز کا حملہ ہوسکتا ہے ۔ 

٭-اگر آپ کے اکاؤنٹ میں زیادہ رقم  ہوتی ہے تو ، اُسے آن لائن  کبھی نہ کروائیں ۔ 
٭- آن لائن اکاؤنٹ میں چھوٹی رقوم رکھیں جو  مختلف آن لائن بل پیمنٹ کے لئے ہوں ۔
 ٭- ای میل پر بہت سی سبز باغ دکھانے والی  ، ای میل ملتی ہیں ، اُنہیں ڈیلیٹ کر دیا کریں ۔

٭٭٭٭٭٭٭فراڈیوں کی خلاف مہاجر زادہ کا جہاد ۔٭٭٭٭٭٭٭

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔