میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

بدھ، 14 اگست، 2019

وارننگ ۔ آپ کا قیمتی انگوٹھا ۔

کیا آپ کو معلوم ہے کہ آپ کی انگلیاں کے نشانات کتنے اہم ہیں ؟
1- یہ آپ کی شناخت ہیں !
 اب تمام دنیا میں ۔ انگلیوں کے نشانات اور آنکھ کی پُتلی سے آپ یک دم شناخت کئے جاسکتے ہیں ۔  2-آ پ کا شناختی کارڈ ، پاسپورٹ ، بنک اکاونٹ   ، انگلیوں کے نشانات سے لنک کئے جاچکے ہیں ۔

یہ تو سب کو معلوم ہے ، کہ ہر انسان کے انگلیوں کے نشانات اور آنکھ کی پتلیاں ایک دوسرے سے مختلف ہیں ۔
آپ کا بنک اکاونٹ ، اُسے صرف ، اپنے دستخطوں سے آپ ہی آپریٹ کر سکتے تھے ۔ 
جب دستخطوں کی ہوبہو نقل کرکے بنکوں سے کسی دوسرے کے اکاونٹ سے نکالے جانے لگے ۔ تو مزید حفاظت کے لئے  ڈیجیٹل کریڈٹ کارڈز بنائے گئے ۔


لیکن کیا ہوا ؟
بنک والوں کی تمام تر احتیاط  کے باوجود ، آپ کی مرضی سے  ، ڈیجیٹل کریڈٹ کارڈز  کی مدد سے آپ کی مرضی سے آپ ہی کے بنک اکاونٹ میں ڈیجیٹل ڈکیتی ہونے لگی  !
بنک والوں نے مزید حفاظتی تدابیر اختیار کیں  اور انگلیوں کے نشانات کی مدد اے اے ٹی ایم مشین سے   کارڈ کے ذریعے رقم نکلانے کا طریقہ متعارف کروایا ۔
لیکن ڈیجیٹل چوروں نے اُس کو بھی  قابو کر لیا ۔لیکن کیسے ؟
یہ تو آپ کو معلوم ہے ، کہ انٹر نیٹ  کے ذریعے آپ ڈیجیٹل چوروں کو  اپنے موبائل ، کمپیوٹر ،لیپ ٹاپ اور آئی پیڈ   میں گھسنے کا موقع خود دیتے ہیں  ۔ 

لالچ ہرا نسان کے ساتھ پیوست ہے ۔ اور لالچ کے کئی روپ ہیں ۔ 
پیغام  انسان کو لالچ پر اُکساتا ہے ۔ جیسے پہلے کروڑپتی افریقی بیوہ کی طرف سے پیغام آیا کرتے تھے ۔ رقم ، محبت ، خوبصورت تصویر ، خزانے کا کھوج یا اِس طرح کے کئی لالچ سے  انسانی تاریخ بھری پڑی ہے ۔اور میں نے بھی مضمون لکھیں ہیں جو سب سے نیچے درج ہیں ۔
آپ کو یاد ہوگا ، کہ چند مہینوں پہلے ، ذہین نوجوان نے وٹس ایپ اپلیکیشن پر انسانی بھلائی کے لئے کام کیا ، جو دیکھتے ہیں دیکھتے دنیا بھر کے نوجوانوں میں مقبول ہوگئی ۔
پھر چھوٹی چھوٹی مزاح کی ایپلیکیشن آنے لگیں ۔ جس کو آپ کلک کرتے تو کوئی پھول ، ڈبہ یا کارڈ کھلتا اور آپ حیرانی سے دیکھتے رہتے ۔ اورخوش ہوتے دوسروں کو شئیر کرواتے ۔ یہاں تک تو ٹھیک تھا ۔
پھر وہ نوجوان  ،جن کے بنک اکاونٹ تھے اُنہوں نے اپنے موبائل اور سمارٹ فون ، رقم کی منتقلی کے لئے استعمال کرنا شروع کر دیا ۔ تو ڈیجیٹل چوروں کی چاندی ہونے لگی ،
اور بنکوں کو گالیاں پڑنے لگیں ، کہ میرے اکاونٹ سے رقم کِس نے نکلوائی؟
بنک کا سادہ جواب  ہوتا۔ " آپ نے "
جب  بائیومیٹرک شناخت کادور شروع ہوا  تو موبائل سے اکاونٹ آپریٹ کرنے والوں نے سکون کا سانس  لیا ۔ 

لیکن پھر  بنکوں کو گالیاں پڑنے لگیں ، کہ  میری بائیو میٹک آئیڈنٹی ٹی  ، کس نے استعمال کرکے میرے اکاونٹ سے رقم  نکلوائی ؟
بنک کا سادہ جواب  ہوتا۔ " آپ نے "
" میں نے " آپ دھاڑتے " ناممکن ہے ، آپ کا کوئی کارندہ ہوگا "
" جناب ، ناممکن ہے ہمارا کوئی نمائندہ آپ سے وٹس ایپ پر بات نہیں کرتا اور نہ ہی آپ کے انگوٹھےکا نشان مانگتا ہے ۔  آپ نے ضرور کسی کو اپنے انگوٹھے کا نشان دیا ہوگا "
اب آپ سوچ میں پڑ جاتے ہیں ، کہ میں نے کب کسی کو اپنے انگوٹھے کا نشان دیا تھا ؟
آج 14 اگست ہے ، آپ نے مہاجر زادہ کی طرف سے فارورڈ کی ہوئی  ایک پوسٹ کھولی ۔ جس کو کھولتے ہیں  آپ کی سکرین پر قوس و قزاح بکھر گئے ۔ اور آزادی مبارک سے سکرین روشن ہوگئی ۔ جب یہ چھوٹی سی ایپلیکشن   ختم ہوئی تو پیغام ابھرا ،
" آپ بھی   یہ خوبصور ت  ایپلیکیشن اپنے دوستوں کو پوسٹ کرنا چاہیں تو سکرین پر اوکے دبائیں ۔
آپ نے اوکے دبایا ، تو پیغام آئے گا ۔



 آپ کو فوراً یاد آجائے گا ، کہ ایسا ہی پیغام چھوٹی عید پر بھی آیا تھا ؟؟؟؟
 تو کیا میرے اکاونٹ سے رقم اُڑانے کے لئے ،  انگوٹھے کا نشان اِس طرح کاپی کیا گیا !
اوہ میرے خدا !
آپ فوراً   ، اپنے بنک کو فون کریں گے ، کہ انگوٹھے کے نشان سے میری رقم نکلوانے کی سہولت ختم کردیں ۔ 

تو کیوں نہ یہ موقع آنے سے پہلے ہوشیار ہوجائیں !


 ٭٭٭٭  ٭فراڈیوں کی خلاف مہاجر زادہ کا جہاد ۔ ٭٭٭٭٭

یہ بھی پڑھئیے 
٭-موبائل پر فراڈ

٭ -  انٹرنیٹ فراڈ   -
 ٭- ھیکرز - 

1 تبصرہ:

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔