میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

ہفتہ، 8 فروری، 2020

کیا اللہ نے الَّذِينَ آمنوا کوخود مَّكَّنَ ، فِي الْأَرْضِ نہیں کیا ؟

  روح القدّس نے مُحَمَّد رَّسُولَ اللَّـهِ وَخَاتَمَ النَّبِيِّينَ کو اللہ کی ناقابلِ تردید مکمل سنت برائے مَّكَّنَّ و مَكِينٌ بتائی :

أَلَمْ يَرَوْاْ كَمْ أَهْلَكْنَا مِن قَبْلِهِم مِّن قَرْنٍ مَّكَّنَّاهُمْ فِي الْأَرْضِ مَا لَمْ نُمَكِّن لَّكُمْ وَأَرْسَلْنَا السَّمَاءَ عَلَيْهِم مِّدْرَارًا وَجَعَلْنَا الْأَنْهَارَ تَجْرِي مِن تَحْتِهِمْ فَأَهْلَكْنَاهُم بِذُنُوبِهِمْ وَأَنْشَأْنَا مِن بَعْدِهِمْ قَرْنًا آخَرِينَ [6:6] 


وَلَقَدْ مَكَّنَّاكُمْ فِي الْأَرْضِ وَجَعَلْنَا لَكُمْ فِيهَا مَعَايِشَ قَلِيلاً مَّا تَشْكُرُونَ [7:10] 

وَعَدَ اللَّهُ الَّذِينَ آمَنُوا مِنكُمْ وَعَمِلُوا الصَّالِحَاتِ لَيَسْتَخْلِفَنَّهُم فِي الْأَرْضِ كَمَا اسْتَخْلَفَ الَّذِينَ مِن قَبْلِهِمْ وَلَيُمَكِّنَنَّ لَهُمْ دِينَهُمُ الَّذِي ارْتَضَى لَهُمْ وَلَيُبَدِّلَنَّهُم مِّن بَعْدِ خَوْفِهِمْ أَمْنًا يَعْبُدُونَنِي لَا يُشْرِكُونَ بِي شَيْئًا وَمَن كَفَرَ بَعْدَ ذَلِكَ فَأُوْلَئِكَ هُمُ الْفَاسِقُونَ [24:55] 

الَّذِينَ إِن مَّكَّنَّاهُمْ فِي الْأَرْضِ أَقَامُوا الصَّلَاةَ وَآتَوُا الزَّكَاةَ وَأَمَرُوا بِالْمَعْرُوفِ وَنَهَوْا عَنِ الْمُنكَرِ وَلِلَّهِ عَاقِبَةُ الْأُمُورِ [22:41]

 وَإِن يُكَذِّبُوكَ فَقَدْ كَذَّبَتْ قَبْلَهُمْ قَوْمُ نُوحٍ وَعَادٌ وَثَمُودُ [22:42]

 نوٹ: کیا اللہ نے الَّذِينَ آمنوا کو مَّكَّنَ ، فِي الْأَرْضِ نہیں کیا؟
 یا وہ گدھے کی پُشت پر سامان لادے خانہ بدوشوں کی زندگی گذار رہے ہیں !!!
 پڑھیں :  الصلوٰۃ ، قُرب الصلوٰۃ اور اقام  الصلوٰۃ-

:٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
 تبصرہ:  محمد شفیق کی پوسٹ پر :
اگر الکتاب کو سرسری پڑھنے والا اگر یہ سمجھتا ہے کہ وہ مَّكَّنَ ، فِي الْأَرْضِ نہیں تو پھر وہ الَّذِينَ آمنوا نہیں ، بلکہ اللہ ہی کے ابدی کلام کے مطابق وہ اقوامِ انسانی کی کسی بھی صنف سے ہو سکتا ہے -
یاد رہے :
٭- اللہ کا کلام اولیں فوقیت رکھتا ہے ، جو الکتاب اور کتاب اللہ(الارض و سماوات)  میں موجود ہے ۔ کتاب اللہ میں آپ کلام اللہ کی ترتیب و ہیت میں تبدیلی لا سکتے ہیں ۔
کیوں کہ کتاب اللہ  پر ختم النبوت نہیں !
الکتاب ، میں کسی بھی صورت میں ایسا نہیں کر سکتے ۔ اُس کے لئے آپ کو  
مُحَمَّد رَّسُولَ اللَّـهِ وَخَاتَمَ النَّبِيِّينَ  کے کندھے پر چڑھ کر ،
  روح القدّس کو پکڑنا ہوگا !
٭- آپ کا الہام ۔

فَأَلْهَمَهَا فُجُورَهَا وَتَقْوَاهَا ﴿91:8
  الکتاب  کی آیات کے لئے اللہ کی وحی نہیں  بلکہ کتاب اللہ کے لئے ، اللہ کی وحی ہے ، جو ہر انسان پر نازل ہو سکتی ہے ۔لیکن اصولِ اللہ !
 وَنَفْسٍ وَمَا سَوَّاهَا ﴿91:7 ۔
 اگر وہ ۔
الارض و سماوات پر تفکّر کرے !

الَّذِينَ يَذْكُرُونَ اللّهَ قِيَامًا وَقُعُودًا وَعَلَى جُنُوبِهِمْ وَيَتَفَكَّرُونَ فِي خَلْقِ السَّمَاوَاتِ وَالأَرْضِ رَبَّنَا مَا خَلَقْتَ هَذَا بَاطِلاً سُبْحَانَكَ فَقِنَا عَذَابَ النَّارِ  ﴿3:191

تو نوجوانو : عَذَابَ النَّارِ سے وَقَى ہونے والا، الارض و سماوات   میں فلاح پانے والا بن جائے گا  -
 قَدْ أَفْلَحَ مَن زَكَّاهَا ﴿91:9 

    ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
 اگر مضامین مزیدپڑھنا چاہیں ، تو درج ذیل لنک حاضر ہیں ۔
٭- کتاب اللہ !

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔